144

پشاور زلمی نے کراچی کنگز کو شکست سے دوچارکرکے فائنل میں پہنچنے کا تاج چھین لیا

پاکستان کے قذافی سٹیڈیم لاہورمیں کھیلے گئے پاکستان سپر لیگ سیزن تھری کے دوسرے پلے آف میچ میں پشاور زلمی نے کراچی کنگزکوتیرہ رنزسے شکست دے کرفائنل کے لئے کوالیفائی کرلیا،

پشاورزلمی کے کامران اکمل میچ کے بہترین کھلاڑی قراردیئے گئے،انہوں نے 27 گیندوں پرآٹھ چھکوں اورپانچ چوکوں کی مدد سے77 رنزبنائے اور پشاورکی جیت میں اہم کردارادا کیا،

کراچی کنگزکے عثمان خان مہنگے بولرثابت ہوئے انہوں نے3اووروں میں16کی اوسط سے48 رنزدے کرایک کھلاڑی کوآؤٹ کرنے میں کامیاب ہوئے۔

کراچی کنگزکے کپتان محمدعامرنے ٹاس جیت کرپشاورزلمی کوپہلے بیٹنگ کی دعوت دی، پشاورزلمی نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 16اووروں میں7وکٹوں کے نقصان پر170رنزبنائے۔

171رنزکے ٹارگٹ کے حصول کے لئے بعد میں بیٹنگ کرتے ہوئے کراچی کنگزمقررہ سولہ اووروں میں2وکٹوں کے نقصان پر157رنزبناسکی۔

کراچی کنگزکی جانب سے اننگزکاآغازمختاراحمداورجوئے ڈینلی نے کیا۔کراچی کی پہلی وکٹ13رنزپرگری جب مختاراحمدایک رن بناکرثمین گل کی گیندپرسیمی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

جب بابراعظم بیٹنگ کے لئے آئے تو دوسری وکٹ کی شراکت میں بابراعظم اورجوئے ڈینلی نے 117رنزکااضافہ کیا,کراچی کی دوسری وکٹ 130رنزپرگری جب بابراعظم45گیندوں پر2چھکوں اور6چوکوں کی مددسے63 رنزبناکرحسن علی کی گیندپرڈاوسن کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے،جوئے ڈینلی79رنزبنا کرناٹ آؤٹ رہے۔

پشاورکی جانب سے حسن علی اورثمین گل نے ایک ایک کھلاڑی کوآؤٹ کیا۔ ہدف کے تعاقب میں کراچی کنگز کی ٹیم مقررہ اوورز میں 157رنز ہی بنانے میں کامیاب ہو پائی۔

اس سے پہلے بارش سے متاثرہ میچ میں کراچی کنگز نے میدان میں باولرز کوفائدہ ملنے کی امید دیکھ کرٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا تو پشاور زلمی کی جانب سے اندرے فلیچر اور کامران اکمل میدان میں آئے جبکہ کراچی کی جانب سے پہلااوورکپتان محمدعامرنے کروایا.

کراچی کنگز کی توقع کے مطابق محمد عامر کا پہلا اوور ان کے لئے اچھا رہا جس میں صرف 2 رنز ہی بن سکے لیکن دوسرے اوور میں پشاور زلمی کے اوپنرز نے اپنا کام دکھانا شروع کردیا اور اس اوور میں 13رنز جڑ دئیے۔کھیل کے تیسرے اوورمحمد عامر نے ایک بار پھر بہترین باولنگ کروا کے مخالف بلے بازوں کو رنز بنانے سے روکا۔

پشاور زلمی کا 3 اوورز کے بعد مجموعہ بغیر کسی نقصان کے 19 تک پہنچ گیا،پلے آف مرحلے کے آخری اوور میں کامران اکمل نے عثمان خان کی زبر دست کلاس لیتے ہوئے انہیں 25 رنز جڑ دئیے جس میں دو چھکے اور تین چوکے شامل تھے

کامران اکمل کا لاٹھی چارج یہاں تک ہی محدود نہیں رہا انہوں نے اسامہ میرکوچھا لگا کر صرف17گیندوں پر5چھکوں اور5چوکوں کی مددسے پی ایس ایل کی تیز ترین نصف سنچری بنا ڈالی۔

پشاور زلمی نے 100رنز کا مجموعہ 8.2اووروں( 50گیندوں)پرمکمل کیا۔پشاور زلمی کو پہلا نقصان نو یں اوور کی پہلی گیند پرہواجب روی بوپار ہ نے 30گیندوں پر34رنز بنانے والے فلیچر کوپویلین کی راہ دکھائی، اسی اوور میں کامران اکمل 27گیندوں پر 8چھکوں اور5چوکوں کی مددسے77رنزبناکرمختاراحمدکے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے ۔

137رنز کے مجموعے پر پشاور زلمی کوتیسر انقصان محمد حفیظ کی صورت میں ہوا ان کی وکٹ بھی روی بوپارہ کے حصے آئی۔پشاور کو چوتھا نقصان 150رنز کے مجموعے پر ہوا جب ڈاﺅسن 13رنز بنا کر عثمان خان کی گیندپرانگرام کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے،ڈیرن سیمی نے 12گیندوں پر 23رنز بنائے ،

ان کی وکٹ ملز کے حصے آئی،وہ ڈینلے کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے،چھٹی وکٹ بھی169رنزپرگری جب سعد نسیم دو رنزبنا کررن آؤٹ ہوئے،ساتویں وکٹ بھی 169رنزپرگری جب وہاب ریاض بغیرکوئی رن بنائے بغیر ملزکی گیندپرڈینلے کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے، 169 کے سکورپرپشاورکی تین وکٹیں گریں۔

کھیل کے اختتامی اوور میں پشاور زلمی کو ئی خاص کمال نہ دکھا پائی اور اسی اوور میں تین وکٹیں گنواتے ہوئے مجموعی طور پرسات وکٹوں کے نقصان پر 170 رنز بنالئے ۔

کراچی کنگزکی جانب سے روی بوپارہ نے3،ٹی ایس ملزنے2 اورعثمان خان نے ایک کھلاڑی کوآؤٹ کیا ۔پشاور زلمی کے جارح مزاج بلے باز کامران اکمل کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا ۔

یاد رہے کہ پاکستان سپر لیگ تھری کا فائنل 25 مارچ کواسلام آبادیونائیٹڈ اور پشاور زلمی کے درمیان شام 6 بجے نیشنل سٹیڈیم کراچی میں کھیلاجائے گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں