86

وہ ایک دوائی جو پاکستانی بے دریغ استعمال کرتے ہیں، آپ کے جگر کیلئے کینسر کی طرح خطرناک ہے.

پیراسیٹامول ڈاکٹر کی ہدایت کے بغیرگھر میں میسر ادویات میں سب سے مقبول گولی ہے۔ معمولی درد اور تھکاوٹ کی صورت میں بھی اس کا استعمال عام ہے لیکن اب سائنسدانوں نے ایک تحقیق کے بعد اسے غیرمعمولی خطرناک قرار دے دیا ہے۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق ایڈنبرا یونیورسٹی کے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ کثرت سے پیراسیٹا مول کھانے سے انسانی جگر کو اتنا ہی نقصان پہنچتا ہے جتنا کہ کینسر، یرقان یا کثرت شراب نوشی سے۔ اور اس وقت دنیا میں جگر فیل ہونے کا سب سے بڑا سبب یہی پیراسیٹا مول کی گولیوں کا زیادہ استعمال ہے۔

سائنسدانوں کی رپورٹ کے مطابق انسانوں اور چوہوں پر اس گولی کے اثرات جانچنے کے تجربات کیے گئے۔ تحقیق میں ثابت ہوا کہ پیراسیٹا مول انسانوں اور چوہوں دونوں کے جگر کے خلیوں کے بنیادی سٹرکچر کو تباہ کر دیتی ہے اور خلیوں کی موت کا سبب بنتی ہے جس کے بعد جگر مناسب انداز میں کام کرنے کے قابل نہیں رہتا۔“

ٹیم کے رکن ڈاکٹر لیونارڈ نیلسن کا کہنا تھا کہ ”جگر کو جو نقصان پیراسیٹا مول سے پہنچتا ہے بالکل ویسا ہی نقصان ہیپاٹائٹس، کینسر اور کثرت شراب نوشی سے پہنچتا ہے۔ اس گولی کو عام طور پر محفوظ سمجھا جاتا ہے مگر ہماری تحقیق میں اس کے برعکس نتائج آئے ہیں۔ اب ہمارے لیے اس گولی کا محفوظ متبادل تیار کرنا ایک چیلنج ہو گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں