107

فواد عالم نوجوانوں پر بازی لے گئے.

ڈومیسٹک کرکٹ میں رنز کے ڈھیر لگانے کے باوجود پاکستانی کرکٹ ٹیم سلیکٹرز کی ستم ظریقی کا شکار فواد عالم نے ایک مرتبہ پھر حکام بالا کو آئینہ دکھاتے ہوئے 32 سال کی عمر میں آئندہ ماہ قومی ٹیم کے دورہ آئرلینڈ اور انگلینڈ کے لیے آج نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں متعدد کھلاڑیوں کے فٹنس ٹیسٹ میں 19 کا متاثر کن اسکور حاصل کر کے سب کو حیران کردیا۔

ڈومیسٹک کرکٹ خاص طور پر قائد اعظم ٹرافی میں عمدہ کارکردگی دکھانے والے فواد عالم کا قومی ٹیم میں شامل نہ کیا جانا کسی معمے سے کم نہیں اور انہوں نے آخری مرتبہ 2015 میں قومی ٹیم کی نمائندگی کی تھی۔

فواد عالم نے گزشتہ ڈومیسٹک سیزن کے 10 فرسٹ کلاس میچوں میں 40.71 کی اوسط سے 570 رنز اسکور کیے تھے۔

دورہ انگلینڈ کے لیے جن کھلاڑیوں کو فٹنس ٹیسٹ کے لیے طلب کیا گیا ان میں فواد عالم کا نام بھی شامل ہے اور فٹنس ٹیسٹ میچ میں انہوں نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 19 نمبر لے کر سلیکٹرز کے لیے وہ تمام بہانے ختم کر دیے ہیں جو ان کے ٹیم سے اخراج کا سبب بن سکتے ہیں۔

فواد عالم نے اپنی عمدہ کارکردگی سے اپنے سے کم عمر نوجوانوں حسن علی، بابر اعظم اور فخر زمان کے سر بھی شرم سے جھکا دیے جو 18 پوائنٹس حاصل کر سکے۔

ان کے مقابلے میں کپتان سرفراز احمد نے 17.4 اسکور کیا جبکہ 25 سالہ نوجوان وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان 21 اسکور کے ساتھ سرفہرست رہے اور اسد شفیق کا 20 اسکور کے ساتھ دوسرا نمبر رہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں