102

شاہین آفریدی کو قومی ٹیسٹ ٹیم میں شامل کرنے پر غور…

خیبر ایجنسی سے تعلق رکھنے والے 17سال کے تیز بولر نے اس سال نیوزی لینڈ میں کھیلے گئے انڈر 19ورلڈ کپ میں پاکستان کی نمائندگی کی تھی جہاں 5 میچوں میں بائیں ہاتھ کے تیز بولر نے 12وکٹیں حاصل کی تھیں

جمعے کو دبئی کرکٹ اسٹیڈیم میں ملتان سلطانز کے خلاف لاہور قلندرز کے بائیں ہاتھ کے تیز بولر شاہین شاہ آفریدی نے چار رنز دیکر 5 وکٹ کی پرفارمینس پیش کی اور لاہور قلندرز کی پاکستان سپر لیگ 2018 کی پہلی جیت میں اہم کردار ادا کر کے میچ کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔

اس سے پہلے لیگ کے تین میچ کھیلنے والے شاہین آفریدی ایک وکٹ بھی حاصل نہیں کر سکے تھے۔

اطلاعات یہ ہیں کہ قومی ٹیم کے کوچ مکی آرتھر تجرباتی بنیادوں پر ٹیسٹ فارمیٹ میں شاہین آفریدی کو اضافی فاسٹ بولر کی حیثیت سے ٹیم کے ہمراہ رکھ کر تیار کرنے کے خواہش مند ہیں۔

یاد رہے پاکستان کرکٹ ٹیم کو اس سال مئی میں ڈبلن میں آئرلینڈ کے خلاف واحد ٹیسٹ اور انگلینڈ میں دو ٹیسٹ کھیلنا ہیں۔

ممکنہ طور پر پاکستان ٹیم کے اس دورے کے لئے فاسٹ بولنگ آپشنز میں محمد عامر، حسن علی، وہاب ریاض اور محمد عباس ہیں لیکن دیکھنا یہ ہے کہ کیا قومی سلیکشن کمیٹی مستقبل کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے تجرباتی طور پر شاہین شاہ آفریدی کو ٹیم کے ہمراہ رکھنے کے حوالے سے کوچ کی رائے کا احترام کرتی ہے یا نہیں؟

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں